اسلام علیئکم
تحریر اعجاز مستوئی
کوئی بھی چیز آپ کہ فارم میں موجود جانوروں کو اتنا ننقصان نہیں پہنچا سکتی جتنا کہ ایک جانور کہ جسم پر موجود چیچڑ اس کو نقصان پنہچا سکتا ہے .. بظاہر تو یہ باہر سے نظر آنے والے چھوٹے سے بیرونی کیڑے ہیں . لیکن اس سے آپ کا جانور کئی خطرناک اور جان لیوا بیماریوں میں مبتلا ہوسکتا ہے . جیسا کہ رت. موترا ( ریڈ واٹر ) جو چیچڑوں کہ وجہ سے ہوتا ہے جس جانور بررقت علاج نا کرنے پر چوبیس گھنٹے کہ اندر جانور مر جاتا ہے .. اس کہ علاوہ ایک اور جان لیوا مرض جس کا کافی ذکر رہا کئی دنوں تک کانگو وائرس جو کہ ایک جان لیوا مرض ہے . انسانوں پر بھی اس کا اثر پڑتا ہے بہت بری طرح .

آئیے ہم سب مل کر ان احتیاطی تدابیروں کو اپنے روز کا معمول بنائیں اور اپنے قیمتی جانوروں کو ان بیرونی کرموں سے پاک رکھیں
احتیاط ....
* اپنے فارم کی روزانہ کی بنیا د پر صفائی کروائیں .
* پکے فرش کو روزانا دھلوائیں اور ہفتہ میں ایک بار جراثیم کش محلول سے لازمی دھلوائیں .
* کچی جگہ جہاں جانور باندھے جاتے ہیں وہاں بلکل بھی گندگی نا ہونے دیں روزانا کی بنیاد پر صفائی کروائیں .
* کچی جگہ پر ہر ہفتہ مکمل صفائی کہ بعد چونے کا چھڑکاو کریں اس سے آپ کہ جانور چیچڑوں اور بیرونی کرموں سے محفوظ رہیں گہ .��
علاج
جانوروں کو بیرونی کرموں سے بچانے کی احتیاط تو اپر بتادی گئی ہے لیکن اگر چیچڑ آپ کہ جانور کو ہوجائیں تو اس کہ لیے دو طریقہ علاج ہیں دونوں طریقہ علاج ایک ساتھ کیے جائیں تو ذیادہ مثبت نتائج سامنے آتے ہیں .
* جانور کو اچھی طرح نہلائیں اس کہ بعد دو کلو صاف پانی میں سیگوان پاوڈر یا ٹرائکلو ویٹ پاوڈر کی دو پڑیاں ملا کر محلول تیار کر لیں اور جانور کسی پلر ببلی یا ممظبوط جگہ پر باندھ دیں گردن اونچی کرکہ اور پاوں میں ونگ لگا دیں تاکہ جانور اچھل کود نا کرے دوا لگاتے وقت . اس کہ بعد دوائی ملا ہو محلول اچھی طرح متاثرہ اعظاء پر لگائیں یا اسپرے کریں اچھی طرح دوائی ملا ہوا پانی لگا کر جانور کو ایک گھنٹہ اسی طرح بندھا رہنے دیں تاکہ جانور کھڑا رہے اور دوا کو چاٹے نہیں زبان سے اس طریقہ عمل کو بہترین نتائیج کہ لہے دہرا بھی سکتے ہیں
* انجکشن آیومیک زیر جلد لگائیں بڑے جانور کو دس ایم ایل اور چھوٹے جانور کو وزن کہ حساب سے . اور بیس دن کہ بعد دوبارہ دہرائیں.. اس طرح مکمل خاتمہ ہوجاۓ گا چیچڑوں اور تمام بیرونی کرموں کا .
نوٹ حاملہ جانورں میں انجکشن استعمال نہیں ہوگا اس کہ لیے صرف پاوڈر والا طریقہ علاج ہی کیا جاۓ گا .
ان سب باتوں پر عمل کرکہ اپنے قیمتی جانوروں کو مہلک امراض سے بچائیں اور منافع بخش کاوروبار کریں.
طالب دعا
اعجاز مستوئی

image
image
image
image